سرکلر ریلوے کی بحالی,10 روز میں ایک زیر تعمیر عمارت منہدم,بیشتر مقامات پر تجاوزات برقرار

ماڑی پور اسٹیشن ، سٹی ، کینٹ ، چنیسر ہالٹ ،ڈرگ روڈ ،ملیر ہالٹ کے اطراف بھینسوں کے باڑے ،ملبے ،جھونپڑیاں اب بھی موجود ہیں،نفری کم اور ہجوم سے نمٹنے کے لئے کوئی سامان موجود نہیں ہے ،ریلوے پولیس

کراچی: کراچی سرکلر ریلوے کے لئے پاکستان ریلوے اور سندھ حکومت کے نمائشی اقدامات جاری ہیں ، گزشتہ10دن میں ایک زیر تعمیر عمارت کو منہدم کیا گیا ، بیشتر مقامات پر تجاوزات بدستور برقرار ہیں۔ تفصیلات کے مطابق کراچی سرکلر ریلوے کی بحالی کیلئے سپریم کورٹ کے احکامات پر پاکستان ریلوے اور سندھ حکومت نے اقدامات شروع کردیے ہیں تاہم گزشتہ 10دن کے دوران ہونیوالی کارروائیاں نمائشی حد تک ہی نظر آرہی ہیں ،پاکستان ریلوے نے ضلعی انتظامیہ کی مدد سے گیلانی اسٹیشن کے قریب چند ماہ قبل تیار ہونے والی زیر تعمیر عمارت کو 5دن میں منہدم کیا ہے جبکہ اس کا کچھ حصہ اب بھی باقی ہے ۔دوسری جانب ماڑی پور اسٹیشن، کراچی سٹی ،کراچی کینٹ ،چنیسر ہالٹ ،ڈرگ روڈ اسٹیشن، ملیر ہالٹ اسٹیشن کے اطراف بھینسوں کے باڑے ، ملبے اور جھونپڑیوں کی صور ت میں تجاوزات قائم ہیں ۔ ریلوے پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ریلوے حکام ایک ایک علاقے میں تجاوزات کے خلاف آپریشن کرینگے تو ہم حصہ بنیں گے کیونکہ ہمارے پاس نہ ہی نفری ہے اور نہ ہی ہجوم سے نمٹنے کیلئے کوئی سامان موجود ہے جبکہ علاقائی پولیس بھی کسی تصادم کی صورت میں مدد کونہیں پہنچتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں